Tuesday, 2017-10-17, 11:36 AM
TEHREER
The Place of Entertainment and knowledge
Welcome Guest | RSS
Site menu
Categories
غزلیاتنظمیں
منتخب اشعارقطعات
Quotationsانتخاب
Entries archive
Recent Blogs-->
Recent Comments-->
thnx inam

hahahah

Thnx inam

hahah nice

thnx inam

Our poll
Rate my site
Total of answers: 22
Main » 2012 » May » 13 » hogaye jawan buchai bori hogai hay maa
9:05 PM
hogaye jawan buchai bori hogai hay maa
ہو گئے جواں بچے، بوڑھی ہو رہی ہے ماں
بے چراغ آنکھوں میں خواب بو رہی ہے ماں


روٹی اپنے حصّے کی دے کے اپنے بچوں کو
صبر کی ردا اوڑھے،بھوکی سو رہی ہے ماں


سانس کی مریضہ ہے پھر بھی ٹھنڈے پانی سے
کتنی سخت سردی میں کپڑے دھو رہی ہے ماں


غیر کی شکایت پر، پھر کسی شرارت پر
مار کر مجھے، خود بھی رو رہی ہے ماں
Category: نظمیں | Views: 171 | Added by: Crescent | Rating: 0.0/0
Total comments: 0
Only registered users can add comments.
[ Registration | Login ]
Search
Login In
Recent Posts-->
Popular Threads-->
Recent Photos-->
Poetry blog
Copyright Tehreer © 2017