Wednesday, 2017-09-27, 0:00 AM
TEHREER
The Place of Entertainment and knowledge
Welcome Guest | RSS
Site menu
Categories
غزلیاتنظمیں
منتخب اشعارقطعات
Quotationsانتخاب
Entries archive
Recent Blogs-->
Recent Comments-->
thnx inam

hahahah

Thnx inam

hahah nice

thnx inam

Our poll
Rate my site
Total of answers: 22
Main » 2012 » August » 1 » Ishq hay rooh ishq zaat ka duk
2:28 PM
Ishq hay rooh ishq zaat ka duk
عشق ہے روح عشق ذات کا دکھ
عشق ہے پوری کائینات کا دکھ
دل پجاری ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ایک پتھر کا
اسکو سہنا ہے سومنات کا دکھ
صبح پھولوں کی ھچکیاں تھی بندھی
کیسا ظالم تھا ڈھلتی رات کا دکھ؟
جیت میرا نصیب تھی لیکن
مجھ کو لے ڈوبا تیری مات کا دکھ
درد دیتی ہے تیری۔۔۔۔۔۔ خاموشی
مار دیتا ہےتیری ۔۔۔۔۔۔ بات کا دکھ
کوبکو در بدر بھٹکتا۔۔۔۔۔۔ ھے
عبرت انجام زرد پات کا دکھ
دشمنوں !دوستوں سے کہہ دینا
دل پہ کاری تھا انکی گھات کا دکھ
حجر اسود پہ اب بھی لکھتے ہیں
لوگ اندر کے اک منات کا دکھ
ارض بے حال بے ثباتی پر
آسماں نیلگوں ثبات کا دکھ
اسکا دل تھا میری طلب کا قیام
اسکو لاحق تھا شش جہات کا دکھ
Category: غزلیات | Views: 183 | Added by: Crescent | Rating: 0.0/0
Total comments: 0
Only registered users can add comments.
[ Registration | Login ]
Search
Login In
Recent Posts-->
Popular Threads-->
Recent Photos-->
Poetry blog
Copyright Tehreer © 2017