Sunday, 2017-11-19, 12:28 PM
TEHREER
The Place of Entertainment and knowledge
Welcome Guest | RSS
Site menu
Categories
غزلیاتنظمیں
منتخب اشعارقطعات
Quotationsانتخاب
Entries archive
Recent Blogs-->
Recent Comments-->
thnx inam

hahahah

Thnx inam

hahah nice

thnx inam

Our poll
Rate my site
Total of answers: 22
Main » 2012 » June » 1 » Saf basta te arab ke jawanan tagh band
0:18 AM
Saf basta te arab ke jawanan tagh band
صف بستہ تھے عرب کے جوانان تيغ بند
تھی منتظر حنا کی عروس زمين شام
اک نوجوان صورت سيماب مضطرب
آ کر ہوا امير عساکر سے ہم کلام
اے بوعبيدہ رخصت پيکار دے مجھے
لبريز ہو گيا مرے صبر و سکوں کو جام
بے تاب ہو رہا ہوں فراق رسول ميں
اک دم کی زندگی بھی محبت ميں ہے حرام
جاتا ہوں ميں حضور رسالت پناہ ميں
لے جائوں گا خوشی سے اگر ہو کوئی پيام
يہ ذوق و شوق ديکھ کے پرنم ہوئی وہ آنکھ
جس کی نگاہ تھی صفت تيغ بے نيام
بولا امير فوج کہ ''وہ نوجواں ہے تو
پيروں پہ تيرے عشق کا واجب ہے احترام
Category: نظمیں | Views: 196 | Added by: Crescent | Rating: 0.0/0
Total comments: 0
Only registered users can add comments.
[ Registration | Login ]
Search
Login In
Recent Posts-->
Popular Threads-->
Recent Photos-->
Poetry blog
Copyright Tehreer © 2017