Saturday, 2017-11-18, 7:31 PM
TEHREER
The Place of Entertainment and knowledge
Welcome Guest | RSS
Site menu
Categories
غزلیاتنظمیں
منتخب اشعارقطعات
Quotationsانتخاب
Entries archive
Recent Blogs-->
Recent Comments-->
thnx inam

hahahah

Thnx inam

hahah nice

thnx inam

Our poll
Rate my site
Total of answers: 22
Main » 2012 » June » 1 » Taaq par jazdan main lepti duain reh gaye
0:12 AM
Taaq par jazdan main lepti duain reh gaye
طاق پر جزدان میں لپٹی دعائیں رہ گئیں
چل دیئے بیٹے سفر پر گھر میں مائیں رہ گئیں

ہو گیا خالی نگر بلوائیوں کے خوف سے
آنگنوں میں گھومتی پھرتی ہوائیں رہ گئیں

درمیاں تو جو بھی کچھ تھا اس کو وسعت کھا گئی
ہر طرف ارض و سما میں انتہائیں رہ گئیں

شب گئے پھرتی ہے غازہ مَل کے بوڑھی خواہشیں
شہر کی سڑکوں پہ اب تو بیسوائیں رہ گئیں

کھولتا ہوں یاد کا در اسم ِاعظم پھونک کر
اس کھنڈر میں جانے اب کتنی بلائیں رہ گئیں

زندگی چلتی ہے کیسے ناز نخرے سے نسیم
اس طوائف میں وہی پہلی ادائیں رہ گئی
Category: غزلیات | Views: 155 | Added by: Crescent | Rating: 0.0/0
Total comments: 0
Only registered users can add comments.
[ Registration | Login ]
Search
Login In
Recent Posts-->
Popular Threads-->
Recent Photos-->
Poetry blog
Copyright Tehreer © 2017