Wednesday, 2017-12-13, 9:02 AM
TEHREER
The Place of Entertainment and knowledge
Welcome Guest | RSS
Site menu
Categories
غزلیاتنظمیں
منتخب اشعارقطعات
Quotationsانتخاب
Entries archive
Recent Blogs-->
Recent Comments-->
thnx inam

hahahah

Thnx inam

hahah nice

thnx inam

Our poll
Rate my site
Total of answers: 22
Main » 2012 » March » 27 » Tere harf e lub ka talasam ta mere aab o tab main reh gaya..
8:05 PM
Tere harf e lub ka talasam ta mere aab o tab main reh gaya..

تیرے حرف و لب کا طلسم تھا، میری آب و تاب میں رہ گیا
وہ کسی گلاب کا جسم تھا، جو میری کتاب میں رہ گیا

میری بات بات میں روشنی، میرے حرف حرف میں دلکشی
تو میرا شریکِ وصال ِجاں، میری ہر کتاب میں رہ گیا

کوئی پھول کھل کے بکھر گیا، کوئی بات بن کے بگڑ گئی
نہ سوال کوئی لبوں پہ ہے، نہ گلہ جواب میں رہ گیا

دل ِخوش گماں تیری خیر ہو، تو ہے پھر یقیں کی صلیب پر
تجھے پھر کسی سے شکایتیں، تو اسی عذاب میں رہ گیا

تجھے کیا ملا دل ِمبتلا، نہ کوئی دعا نہ کہیں وفا
مگر ایک عرصۂِ رائیگاں، جو تیرے حساب میں رہ گیا

وہ جو میرا عہدِ جمال تھا، وہ جو میرا شہر ِخیال تھا
کہ اب اس کا ذکر ِکمال بھی، کہیں حرف و خواب میں رہ گیا
Category: غزلیات | Views: 261 | Added by: Crescent | Rating: 0.0/0
Total comments: 0
Only registered users can add comments.
[ Registration | Login ]
Search
Login In
Recent Posts-->
Popular Threads-->
Recent Photos-->
Poetry blog
Copyright Tehreer © 2017