Sunday, 2017-11-19, 12:35 PM
TEHREER
The Place of Entertainment and knowledge
Welcome Guest | RSS
Site menu
Categories
غزلیاتنظمیں
منتخب اشعارقطعات
Quotationsانتخاب
Entries archive
Recent Blogs-->
Recent Comments-->
thnx inam

hahahah

Thnx inam

hahah nice

thnx inam

Our poll
Rate my site
Total of answers: 22
Main » 2012 » April » 28 » Wo de rha hay dalasy tu umer bhar ke mujay
6:38 PM
Wo de rha hay dalasy tu umer bhar ke mujay
وہ دے رہا ہے دلاسے تو عمر بھر کے مجھے
بچھڑ نہ جائے کہیں پھر اُداس کر کے مجھے

جہاں نہ تُو، نہ تیری یاد کے قدم ہونگے
ڈرا رہے ہیں وہی مرحلے سفر کے مجھے

ہواِ دشت مجھے اب تو اجنبی نہ سمجھ
کہ اب تو بھول گئے راستے بھی گھر کے مجھے

دل ِتباہ ترے غم کو ٹالنے کے لئے
سنا رہا ہے فسانے اِدھر اُُدھر کے مجھے

کچھ اِس لئے بھی میں اُس سے بچھڑ گیا مُحسن
وہ دُور دُور سے دیکھے ٹھہر ٹھہر کے مجھے
Category: غزلیات | Views: 142 | Added by: Crescent | Rating: 0.0/0
Total comments: 0
Only registered users can add comments.
[ Registration | Login ]
Search
Login In
Recent Posts-->
Popular Threads-->
Recent Photos-->
Poetry blog
Copyright Tehreer © 2017