Wednesday, 2017-12-13, 9:06 AM
TEHREER
The Place of Entertainment and knowledge
Welcome Guest | RSS
Site menu
Categories
غزلیاتنظمیں
منتخب اشعارقطعات
Quotationsانتخاب
Entries archive
Recent Blogs-->
Recent Comments-->
thnx inam

hahahah

Thnx inam

hahah nice

thnx inam

Our poll
Rate my site
Total of answers: 22
Main » 2012 » May » 1 » Mushkilo se usy sambala hay
2:35 PM
Mushkilo se usy sambala hay
مشکلوں سے اِسے سمبھالا ہے
اِک تیرا غم جو ہم نے پالا ہے

عہد و پیمان توڑ کر سارے
مُجھ کو اُلجھن میں تُو نے ڈالا ہے

مِل گئیں تلخیاں زمانے کی
فِکرِ دُنیا نے روند ڈالا ہے

زندگی کھو گئی اندھیروں میں
کوں جانے کہاں اُجالا ہے

سب سے ملتا ہے مُسکُرا کر تُو
تیرا انداز ہی نرالا ہے

ہونٹ میں نے تو سی لیے ناصر
راز اپنوں نے ہی اُچھالا ہے
Category: غزلیات | Views: 170 | Added by: Crescent | Rating: 0.0/0
Total comments: 0
Only registered users can add comments.
[ Registration | Login ]
Search
Login In
Recent Posts-->
Popular Threads-->
Recent Photos-->
Poetry blog
Copyright Tehreer © 2017